Our Beacon Forum

In the Rain
By:Badar Habib US
Date: Monday, 27 July 2020, 1:39 am

تم احتیاط کے مارے نہ آئے بارش میں
ہمارے ساتھ پرندے نہائے بارش میں

کھڑے تھے دونوں طرف پیڑ چھتریاں لیکر
کہ راستہ نہ کہیں بھیگ جائے بارش میں

میں اتنے رنگ بکھرتے نہ دیکھ پاؤں گا!!
خدارا کوئی بھی تتلی نہ جائے بارش میں

گئی رتوں کی کوئی ایسی بات یاد آئی
نہ پھول پتے نہ ہم مسکرائے بارش میں

برستے مینہ میں بھی اشکوں کی لو بلند رہی
یہ وہ چراغ ہے جو بجھ نہ پائے بارش میں

کسی کو آئی نظر کھلکھلاتی قوسِ قزح !!!
کسی نے دیکھے اداسی کے سائے بارش میں

ہم آج بھیگ گئے سر سے پاؤں تک نیّر
کسی کے غم نے وہ چھینٹے اڑائے بارش میں