Our Beacon Forum

Re: Immaculate Conception !!???
By:Mubashir, Canada
Date: Sunday, 24 December 2017, 12:54 am
In Response To: Immaculate Conception !!??? (abdalaziz ariff / indiana)

باپ کے بغیر کوئ بھی بچہ پیدا نہیں ہو سکتا۔ ہے- یہ میں نہیں اللہ کا فرمان ہے- لیاقت
سورہ نساء،ی پہلی آیت میں اللہ نے کہا،” اے انسانوں تم اپنے آقا و مالک( جسکا حکم غلام یا نوکر مان کر عمل کرتے ہیں، اسکی نافرمانی سے بچو( اتقواربکم)جس نے تم کو ایک نفس سے پیدا کیا ہے( نفس = جو سانس لے اور جس میں خون بہتا ہو- یہاں مراد سب سے پہلا خلیہ ہے، جس سے انسان کی ارتقائ پیدائش شروع ہوئ- یہاں شخص یا آدم کا ذکر نہیں ہے)اس میں سے اسکا زوجھایعنی اس مونث کا جوڑا ساتھی بنایا اور اس میں سے بہت سارے مرد اور عورت پیدا کرکے پھیلا دیۓ-۔۔۔۔۔۔”۔
یہاں سمجھنے کی بات یہ ہے کہ رب آقاو مالک ہوتا ہے جسکے احکامات پر عمل ہوتا ہے- پروردگار اسکا درست ترجمہ نہیں ہے، کیونکہ انسان کی پیدائش کا ارتقائ سلسلہ ایک نفس سے شروع ہوا- جو مونث ہے اور اسی میں سے اسکا جوڑا بنایا۔ جوڑا تقریب”اسی جیسا ہوتا ہے- یعنی مذکر اور مونث۔پھر ان سے بہت سارے مرد اور عورت بناۓ- اس سے ثابت ہوا کہ مرد اور عورت کے ملاپ سے ہی بچہ پیدا ہوتا ہے-پھر ۸۶:۶،۷ میں کہا کہ،”انسان اچھلتے پانی سے پیدا کیا گیا ہے-( ماء دافق) جو پیٹھ اور سینے کے بیچ میں سے نکلتا ہے( یعنی مرد کا مادہ منویہ)-“
سائینس کے علم تحقیق کے مطابق بھی مرد کی منی اور عورت کے انڈے کے ملاپ سے بچہ پیدا ہوتا ہے- یہ غلط فہمی ہے کہ مریم عس کو بن شوہر کے عیسی عس پیدا ہوۓ ، اور اسی لیۓ انکو ابن مریم کہا جاتا ہے- مگر ان سے پوچھیں کہ اللہ نے کہاں کہا ہے کہ انکی پیدائش بغیر باپ کے ہوئ یا یہ معجزہ اللہ نے دکھایا- معجزہ عربی لفظ ہے مگر قرآن میں کہیں نہیں آیا ہے-
مریم کو اللہ کے بھیجے ہوۓ( رسول) ایک آدمی( بشر) نے کہا کہ میں تمہارے آقا و مالک کے حکم سے تمہیں ایک نشو و نما یافتہ یعنی صحتمند اور اچھا لڑکا دینے آیا ہوں”۔( ۱۹:۱۹)۔مریم نے کہا،” مجھے لڑکا کیسے ہوگا جب مجھے کوئ آدمی چھوئیگا ہی نہیں اور میں بغاوت بھی نہیں کرونگی( لم یمسسنی بشر و لم اک بغیا) (۱۹:۲۰)۔
ان آیتو ن سے بھی ثابت ہوتا ہے کہ مریم نے کہا کہ اسے کوئ مرد نہیں چھوئیگا کیونکہ اس نے یہ عہد کر رکھا ہے اور وہ اپنے عہد سے بغاوت نہیں کریگی- بشر کے چھونے سے مراد جنسی مباشرت ہی ہوتی ہے اور یہ ثابت کرتا ہے کہ مریم بھی مرد کے بغیر یہ نہیں کریگی- اسکے بعد جب اس آدمی نے مریم کو قائل کر لیا تو مریم شادی کرنے کو تیار ہوگئ کیونکہ لفظ فحملتہ فانتبذت بہ یعنی اس نے اسکا بوجھ اٹھا لیا، جسکا مطلب یہی ہوا کہ اسکے مادہ منوی کو اس کے انڈے نے اٹھا لیا، مباشرت کے وقت۔اور پھر اسکے یعنی اس مرد کے ساتھ(بہ) وہ ایک دور کی جگہ چلی گئ( کیونکہ کلیسا والے سخت مخالف تھےاور اسکی شادی کو تسلیم نہیں کرتے تھے)۱۹:۲۲)۔یاد رہے کہ حمل یعنی بوجھ اٹھانا فعل ماضی معروف ہے یعنی مریم نے یہ حمل اپنی مرضی سے خود اٹھایا- اللہ نے کہیں بھی یہ نہیں کہا کہ فرشتہ نے پھونک ماری یا مریم کو معجزانہ طور پر بچہ کا حمل ہو گیا- ایک اور آیت میں اللہ نے کہا،” اسے یعنی انسان کو کس چیز سے بنایا؟نطفہ سے مایا پھر اسکا پیمانہ( نشو و نما،یعنی پرورش جو پیٹ میں ہوتی ہے)۸۰:۱۸،۱۹)”۔ ۶۶:۱۲ میں اللہ نے کہا،”اور عمران کی بیٹی مریم جنہوں نے اپنی شرمگاہ کو (صرف اپنے شوہر کے لیۓ) محفوظ رکھا۔ ( احصنت فرج ھا) پھر ہم نے اس میں( یعنی شرمگاہ میں)اپنی ایک روح ( جان۔ سانس لینے کی قوت) پھونکی ۔۔۔۔۔۔” اس سے بھی ثابت ہوا کہ جس طرح ہر آدمی اور عورت کی پیدائش سے پہلے اللہ اپنی ایک روح عورت کے پیٹ میں ڈالتا ہے، مریم کے پیٹ میں بھی عیسی عس کی روح ڈالی گئ-
انجیل میں بھی لکھا ہے کہ، عیسی عس نے کہا کہ،” میں ایک انسان کا بیٹا ہوں-“ اور دوسری جگہ مریم کلیسا میں جاتی ہے جہاں عیسی عس تبلیغ کر رہے تھے، تو مریم نے ان سے کہا کہ گھر چلو، تمہارا باپ اور تمہارے بہن بھائ تمہارا انتظار کر رہے ہیں- تیسرا ثبوت یہ ہے کہ جو شجرہ انجیل کے پہلے صفحے پر لکھا ہوا ہے اس میں یوسف اور انکے آباؤ اجداد کے نام دے کر داؤد عس تک لکھا ہے- اگر وہ بن باپ کے پیدا ہوۓ تو اس شجرہ کی ضرورت ہی نہین تھی۔ صرف یہ لکھنا کافی تھا کہ عیسی ابن مریم۔ اگر ہم سوچیں سمجھیں، تو درست مفہوم پا سکتے ہیں۔ مگر ہم تو تقلید اور نقل بغیر عقل استعمال کیۓ صرف سنی سنائ بات ماننے کے عادی ہو چکے ہیں- کیا میں نے درست کہا ہے؟

لیاقت سمع

Messages In This Thread

Immaculate Conception !!???
abdalaziz ariff / indiana -- Saturday, 23 December 2017, 1:21 pm
Re: Immaculate Conception !!???
Mubashir, Canada -- Sunday, 24 December 2017, 12:54 am
Re: Immaculate Conception !!???
Dr Shabbir, Florida -- Sunday, 24 December 2017, 1:16 am